Aah Ko Chahiye Ek Umar Asar Hone Tak

شاعر: مرزا غالب آہ کو چاہیے اک عمر اثر ہوتے تککون جیتا ہے تری زلف کے سر ہوتے تک دام ہر موج میں ہے حلقۂمزید پڑھیں

Dil Hi To Hai Na Sang-o-Khisht Dard Se

شاعر: مرزا غالب دل ہی تو ہے نہ سنگ و خشت درد سے بھر نہ آئے کیوںروئیں گے ہم ہزار بار کوئی ہمیں ستائے کیوںمزید پڑھیں

Hazaron khwahishen aisi ki har khwahish pe dam nikle

شاعر: مرزا غالب ہزاروں خواہشیں ایسی کہ ہر خواہش پہ دم نکلے بہت نکلے مرے ارمان لیکن پھر بھی کم نکلے ڈرے کیوں میرا قاتلمزید پڑھیں

Dil-E-NadanTujhe Hua Kya Hai

شاعر: مرزا غالب دل ناداں تجھے ہوا کیا ہےآخر اس درد کی دوا کیا ہے ہم ہیں مشتاق اور وہ بیزاریا الٰہی یہ ماجرا کیامزید پڑھیں

Muddat hui hai yaar ko mehman kiye hue

شاعر: مرزا غالب مدت ہوئی ہے یار کو مہماں کیے ہوئےجوش قدح سے بزم چراغاں کیے ہوئے کرتا ہوں جمع پھر جگر لخت لخت کوعرصہمزید پڑھیں

Ye Na Thi Hamari Qismat Ke Visal E Yaar Hota

شاعر: مرزا غالب یہ نہ تھی ہماری قسمت کہ وصال یار ہوتا اگر اور جیتے رہتے یہی انتظار ہوتا ترے وعدے پر جیے ہم تومزید پڑھیں