Duriyan SimaTne Mein Der Kuchh To Lagti Hai

شاعر: امجد اسلام امجد دوریاں سمٹنے میں دیر کچھ تو لگتی ہےرنجشوں کے مٹنے میں دیر کچھ تو لگتی ہے ہجر کے دوراہے پر ایکمزید پڑھیں

Roz Taron Ko Numaish Mein Khalal Parta Hai

شاعر: راحت اندوری روز تاروں کی نمائش میں خلل پڑتا ہےچاند پاگل ہے اندھیرے میں نکل پڑتا ہے ایک دیوانہ مسافر ہے مری آنکھوں میںوقتمزید پڑھیں

Apne Ghar Ki Khidki Se Main Aasman Ko Dekhunga

شاعر: امجداسلام امجد اپنے گھر کی کھڑکی سے میں آسمان کو دیکھوں گاجس پر تیرا نام لکھا ہے اس تارے کو ڈھونڈوں گا تم بھیمزید پڑھیں

Bhidh Mein Ek Ajnabi Ka Samna Achchha Laga

شاعر: امجد اسلام امجد بھیڑ میں اک اجنبی کا سامنا اچھا لگاسب سے چھپ کر وہ کسی کا دیکھنا اچھا لگا سرمئی آنکھوں کے نیچےمزید پڑھیں

kahan aa ke rukne the raste

شاعر: امجد اسلام امجد کہاں آ کے رکنے تھے راستے کہاں موڑ تھا اسے بھول جاوہ جو مل گیا اسے یاد رکھ جو نہیں ملامزید پڑھیں

Ishq Aisa Ajeeb Darya Hai

شاعر: امجد اسلام امجد عشق ایسا عجیب دریا ہےجو بنا ساحلوں کے بہتا ہے مغتنم ہیں یہ چار لمحے بھیپھر نہ ہم ہیں نہ یہمزید پڑھیں

Apne Hone Ki Tab O Taab Se Bahar Na Hue

شاعر: امجد اسلام امجد اپنے ہونے کی تب و تاب سے باہر نہ ہوئےہم ہیں وہ سیپ جو آزادۂ گوہر نہ ہوئے حرف بے صوتمزید پڑھیں