Malal Karta Hua Zindagi Pe Hansta Hua

Ghazal

Malal Karta Hua Zindagi Pe Hansta Hua
Yeh kaun guzra gali se gali pe hansta hua

Khuda nahi tha yeh maloom hai magar koi tha
Jo kal sunai diya admi pe hansta hua

Main shayari ky frishte ko roz dekhta hun
Kisi pe rota hoaa kisi pe hansta hua

Malal karta hua zindagi pe hansta hua
Yeh kaun guzra gali se gali pe hansta hua

غزل
ملال کرتا ہوا زندگی پہ ہنستا ہوا
یہ کون گزرا گلی سے گلی پہ ہنستا ہوا
خدا نہیں تھا یہ معلوم ہے مگر کوئی تھا
جو کل سنائی دیا آدمی پہ ہنستا ہوا
میں شاعری کے فرشتے کو روز دیکھتا ہوں
کسی پہ روتا ہوا کسی پہ ہنستا ہوا
ملال کرتا ہوا زندگی پہ ہنستا ہوا
یہ کون گزرا گلی سے گلی پہ ہنستا ہوا

اپنا تبصرہ بھیجیں