Har Ek Hazar Mein Bas Panch Saat Hain Hum Log

Har Ek Hazar Mein Bas Panch Saat Hain Hum Log

Har Ek Hazar Mein Bas Panch Saat Hain Hum Log
Nisaab-e-ishq peh wajib-e-zakat hain hum log

Dabao mein bhi jamaat kabhi nahi badli
Shuru din se mohabbat ke sath hain hum log

Jo seekhni ho zuban-e-sukoot bismillah
Khamoshiyon ki mukamal lughat hain hum log

Kahaniyon ke woh kirdaar jo likhay nah gaye
Khabar se hazaf shuda waqiyaat hain hum log

Yeh intezaar hamein dekh kar banaya gaya
Zahoor-e-hijr se pehle ki baat hain hum log

Kisi ko rasta de den kisi ko pani nah den
Kahin peh neel kahin par furaat hain hum log

Hamein jala ke koi shab guzar sakta hai
Sarak peh bikhray hoye kaghzat hain hum log

Har ik hazar mein bas panch saat hain hum log
Nisaab-e-ishq peh wajib-e-zakat hain hum log
غزل
ہر اک ہزار میں بس پانچ سات ہیں ہم لوگ
نصاب عشق پہ واجب زکوٰۃ ہیں ہم لوگ

دباؤ میں بھی جماعت کبھی نہیں بدلی
شروع دن سے محبت کے ساتھ ہیں ہم لوگ

جو سیکھنی ہو زبان سکوت بسم اللہ
خموشیوں کی مکمل لغات ہیں ہم لوگ

کہانیوں کے وہ کردار جو لکھے نہ گئے
خبر سے حذف شدہ واقعات ہیں ہم لوگ

یہ انتظار ہمیں دیکھ کر بنایا گیا
ظہور ہجر سے پہلے کی بات ہیں ہم لوگ

کسی کو راستہ دے دیں کسی کو پانی نہ دیں
کہیں پہ نیل کہیں پر فرات ہیں ہم لوگ

ہمیں جلا کے کوئی شب گزار سکتا ہے
سڑک پہ بکھرے ہوئے کاغذات ہیں ہم لوگ

ہر اک ہزار میں بس پانچ سات ہیں ہم لوگ
نصاب عشق پہ واجب زکوٰۃ ہیں ہم لوگ
Poet: Umair Najmi

اپنا تبصرہ بھیجیں