Hum Ne Ek Doje Se Ro Ro Ke Kai Ahad Liye Thay

Hum Ne Ek Doje Se Ro Ro Ke Kai Ahad Liye Thay

Hum Ne Ek Doje Se Ro Ro Ke Kai Ahad Liye Thay
Aur wafaon ki zamant mein alam rakha howa tha

Mein usay rani mujhe raja kaha karti thi wo bhi
Hum ne ek doje ki ghurbat ka barhm rakha howa tha

Mein us ke samne aankhen jukha ke bethta tha
So us ko dekhta kam ziada suchta tha

Usay batane ki zihmat nahi hoi thi kabhi
Wo mushkilon mein faqt meri aur dekhta tha

Mein ek umar se awazin day raha hoon keh ho
Yahin kahin tha koi jo mujhe pukarta tha

Usay pta tha bura waqt aane wala hai
Khuda tumhari hifazat karay wo bolta tha

Mein us ke pas dubara kabhi gaya hi nahi
Wo sab se milta tha aur mera khoon kholta tha

Tyees saal ka hoon aur haath kanpte hain
Mein jin ko dekh na paya tha un ko suchta tha

Hum ne ek doje se ro ro ke kai ahad liye thay
Aur wafaon ki zamant mein alam rakha howa tha
غزل
ہم نے اک دوجے سے رو رو کے کئی عہد لیے تھے
اور وفاوں کی ضمانت میں علم رکھا ہوا تھا

میں اسے رانی مجھے راجہ کہا کرتی تھی وہ بھی
ہم نے اک دو جے کی غربت کا بھرم رکھار ہوا تھا

میں اس کے سامنے انکھیں جھکا کے بیٹھتا تھا
سو اس کو دیکھتا کم تھا زیادہ سوچتا تھا

اسے بتانے کی زحمت نہیں ہوئی تھی کھبی
وہ مشکلوں میں فقط میری اور دیکھتا تھا

میں ایک عمر سے آوازیں دے رہا ہوں کہ ہو
یہیں کہیں تھا کوئی جو مجھے پکارتا تھا

اسے پتا تھا برا وقت انے والا ہے
خدا تمہاری خفاظت کرے وہ بولتا تھا

میں اس کے پاس دوبارہ کبھی گیا ہی نہیں
وہ سب سے ملتا تھا اور میرا خون کھولتا تھا

تیئس سال کا ہوں اور ہاتھ کانپتے ہیں
میں جن کو دیکھ نہ پایا تھا ان کو سوچتا تھا

ہم نے اک دوجے سے رو رو کے کئی عہد لیے تھے
اور وفاوں کی ضمانت میں علم رکھا ہوا تھا

اپنا تبصرہ بھیجیں