Handola Jhulne Wale

Handola Jhulne Wale

Handola Jhulne Wale
Zameen se kat ke uncha jhunle ki chaah rakhte hain tou phir jhulen
Magar yeh yaad rakhen
Zameen se kat ke uncha jhulne wale fizzawon mein muallaq hi rahengay
Jhulane wale ke rahm-o-karam par daira dar daira gardish karenge
Aur zameen par laut kar bhi be zamini ke alm sehte rahengay
Handola jhulne wale
Zameen se kat ke uncha jhulne ki chaah rakhte hain
Tou phir jhulen magar yeh yaad rakhin

نظم
ہنڈولا جھولنے والے
زمیں سےکٹ کے اونچا جھولنے کی چاہ رکھتے ہیں تو پھر جھولیں
مگر یہ یاد رکھیں
زمیں سے کٹ کے اونچا جھولنے والے فضاوں
میں معلق ہی رہیں گے
جھلانے والے کے رحم و کرم پر دائرہ در دائرہ
گردش کریں گے
اور زمیں پر لوٹ کر بھی بے زمیںی کے الم
سہتے رہیں گے
ہنڈولا جھولنے والے
زمیں سےکٹ کے اونچا جھولنے کی چاہ رکھتے
ہیں
تو پھر جھولیں مگر یہ یاد رکھیں

اپنا تبصرہ بھیجیں