Be-Sud Bolna Aise Jaise Adhi Ankh Ka Khawab

Be-Sud Bolna Aise Jaise Adhi Ankh Ka Khawab

Ghazal
Be-Sud Bolna Aise Jaise Adhi Ankh Ka Khawab
Baatan sud mein ho tu lazf-e-karamat karta hai tou
Kushta hi kiye jata hai dekla ke ada tou
Samjhe hain mian apne taain khuda tou
Galion mein phira bhi hai kabhoo chaar garibaan tou
Aur kahe meer sa khud ko abhy ja tou
Be-sud bolna aise jaise aadhi ankh ka khawab
Baatan sud mein ho tu lazf karamat karta hai tou
غزل
بے صُد بولنا ایسے جیسے آدھی آنکھ کا خواب
باطن صُد میں ہو تو لفظِ کرامت کرتا ہے تو
کشتہ ہی کیے جاتا ہے دکھلا کے ادا تو
سمجھے ہیں میاں اپنے تائیں خدا تو
گلیوں میں پھیرا بھی ہے کبہو چار گریباں تو
اور کہے میر سا خود کو ابھے جا تو
بے صُد بولنا ایسے جیسے آدھی آنکھ کا خواب
باطن صُد میں ہو تو لفظ کرامت کرتا ہے تو

اپنا تبصرہ بھیجیں