Zane Hussen Thi Phool Chun Ky Lati Thi

غزل
زنِ حسین تھی پھول چن کے لاتی تھی
میں شعر کہتا تھا وہ داستان سناتی تھی

اُسے پتہ تھا میں دنیا نہیں محبت ہوں
وہ میرے سامنے کچھ بھی نہیں چھپاتی تھی

یہ پھول دیکھ رہے ہو یہ اُس کا لہجہ تھا
یہ جھیل دیکھ رہے ہو یہاں وہ آتی تھی

اُسے کسی سے محبت تھی اور وہ میں نہیں تھا
یہ بات مجھ سے زیادہ اُسے رولاتی تھی

میں کچھ بتا نہیں سکتا وہ میری کیا تھی علیؔ
کہ اُس کو دیکھ کے اپنی یاد آتی تھی
Ghazal
Zane Hussen Thi Phool Chun Ky Lati Thi
Main sher kehta tha woh dastaan sunati thi

Usay pata tha main duniya nahi mohabbat hun
Woh meray samnay kuch bhi nahi chupati thi

Yeh phool dekh rahy ho yeh us ka lehja tha
Yeh jheel dekh rahy ho yahan wo aati thi

Usay kise sy mohabbat thi aur wo main nahi tha
Yeh baat mujh sy zaida usay rolati thi

Main kuch bata nahi sakta wo meri kiya thi ali
Keh unko dekh ky apni yaad aati thi

اپنا تبصرہ بھیجیں