Wafa Ki Khair Manata Hoon Bewafai Mein Bhi

Wafa Ki Khair Manata Hoon Bewafai Mein Bhi

Wafa Ki Khair Manata Hoon Bewafai Mein Bhi
Mein eski qaid main hoon qaid se rehai main bhi

Lahoo ki aag main jal bujh gaye badan tu khula
Rasai mein bhi khasara hai na rasai mein bhi

Badltay rehty hain musam guzrta rehta hai waqt
Magar yeh dil keh wahin ka wahin judai mein bhi

Lihaz e hurmat peman , na paas ham khwabi
Ajab tarah ke tasadum thay aashnai mein bhi

Mein das baras se kisi khwab ke azab mein hoon
Wohi azab dar aya hai es duhai mein bhi

Tasadum dil o duniya mein dil ki haar ke baad
Hijab aane laga hai ghazal sarai mein bhi

Mein ja raha hoon ab es ki taraf usi ki taraf
Jo mere sath tha meri shakasta pai mein bhi

Wafa ki khair manata hoon bewafai mein bhi
Mein eski qaid main hoon qaid se rehai main bhi
غزل
وفا کی خیر مناتا ہوں بے وفائی میں بھی
میں اسکی قید میں ہوں قید سے رہائی میں بھی

لہو کی آگ میں جل بجھ گئے بدن تو کھلا
رسائی میں بھی خسارہ ہے نا رسائی میں بھی

بدلتے رہتے ہیں موسم گزرتا رہتا ہے وقت
مگر یہ دل کہ وہیں کا وہیں جدائی میں بھی

لحاظِ حرمت پیماں ، نہ پاس ہم خوابی
عجب طرح کے تصادم تھے آشنائی میں بھی

میں دس برس سے کسی خواب کے عذاب میں ہوں
وہی عذاب در آیا ہے اس دہائی میں بھی

تصادم دل و دنیا میں دل کی ہار کے بعد
حجاب آنے لگا ہے غزل سرائی میں بھی

میں جا رہا ہوں اب اسکی طرف اسی کی طرف
جو میرے ساتھ تھا میری شکستہ پائی میں بھی

وفا کی خیر مناتا ہوں بے وفائی میں بھی
میں اسکی قید میں ہوں قید سے رہائی میں بھی

اپنا تبصرہ بھیجیں