Tumharay Baad Yeh Dukh Bhi To Sehna Parh Raha

Ghazal
Tumharay Baad Yeh Dukh Bhi To Sehna Parh Raha Hai
Kisi kay sath majboori main rehna parh raha hai

Mujhy baate’n nahi teri mohabbat chahiya thi
Mujhy afsos hai yeh mujko kehna parh raha hai

Meri doori kahin us jism ko sehra na kar day
Ali mujko zayada taiz behna parh raha hai
غزل
تمہارے بعد یہ دکھ بھی تو سہنہ پڑ رہا ہے
کسی کے ساتھ مجبوری میں رہنا پڑ رہا ہے

مجھے باتیں نہیں تیری محبت چاہیئے تھی
مجھے افسوس ہے یہ مجھکو کہنا پڑ رہا ہے

میری دوری کہیں اُس جسم کو صحرا نہ کردے
علیؔ مجھکو زیادہ تیز بہنہ پڑ رہا ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں