Ali Iftikhar Ki Maan Se Mein Ne Bataya Hai

Ali Iftikhar Ki Maan Se Mein Ne Bataya Hai

Ali Iftikhar Ki Maan Se Mein Ne Bataya Hai Keh Apne Betay Ko
Titliyon ke qarib jane se rokiye

Usay rokiye keh parosiyon ke gharon mein jhole parre hoye hain tou us se kia
Usay kia parri keh kabootaron ko bataye kaise hawayein

Ki patang cheen ke le gayin
Ali iftikhar ki maan se mein ne bataya hai keh apne bete

Ko titliyon ke qarib jane se rokiye
Kahin yoon na ho keh phir ek baar bhari bahar mein

Aitbaar ke saare zakhm mehak uthen
kahin yoon na ho keh naye sire se humare zakham mehak uthen

Ali iftikhar ki maan se mein ne bataya hai keh
 apne bete ko titliyon ke qareb jane se rokiye

Ali iftikhar ki maan se mein ne bataya hai keh apne betay ko
Titliyon ke qarib jane se rokiye
نظم
علی افتحار کی ماں سے میں نے بتایا ہے کہ اپنے بیٹے کو
تتلیوں کے قریب جانے سے روکئے

اسے روکئے کہ پڑوسیوں کے گھروں میں جھولے
پڑے ہوئے ہیں تو اس سے کیا

اسے کیا پڑی کہ کبوتروں کو بتائے کیسے ہوائیں
اس کی پتنگ چھین کے لے گئیں

علی افتحار کی ماں سے میں نے بتایا ہے کہ اپنے بیٹے کو
تتلیوں کے قریب جانے سے روکئے

کہیں یوں نہ ہو کہ پھر ایک بار بھری بہار میں
اعتبار کےسارے زخم مہک اٹھیں

کہیں یوں نہ ہو کہ نئے سرے سے ہمارے زخم مہک اٹھیں
علی افتحار کی ماں سے میں نے بتایا ہے کہ اپنے بیٹے کو
تتلیوں کے قریب جانے سے روکئے

اپنا تبصرہ بھیجیں