Kahan Mehfil Mein Mujh Tak Baad| Udaas Dil Poetry

Kahan Mehfil Mein Mujh Tak Baad| Udaas Dil Poetry

Kahan Mehfil Mein Mujh Tak Baadah Gulfam Aata Hai
Jo mera naam aata hai tou khali jaam aata hai

Nah aaw tum to phir kyun hichkyun par hichkiyan aayen
Unhein ro ko yeh kyun pegham par pegham aata hai

Yeh sawan yeh ghata yeh bijliyan yeh tootti raten
Bhala aisay mein dil walon ko kab aaram aata hai

Adab a jazba bebaak yeh aah-o-fughan kaisi
Keh aise zindagi se mout par ilzaam aata hai

Madad aye marg nakami naqahat ka yeh alam hai
Bari mushkil se hunton tak kisi ka naam aata hai

Khuda rakhe tujhe a sar zameen shahr khamoshan
Yahin aakar har ik be chain ko aaram aata hai

Maazallah meri aankhon ke inzhar tang zarfi
Tapak parte hain aanso jab tumhara naam aata hai

Zamane mein nahi dildaah meher-o-wafa koi
Tujhe dhooka hai aa dil kon kis ke kaam aata hai

Kahan mehfil mein mujh tak baadah gulfam aata hai
Jo mera naam aata hai tou khali jaam aata hai
غزل
کہاں محفل میں مجھ تک بادہ گلفام آتا ہے
جو میرا نام آتا ہے تو خالی جام آتا ہے

نہ آو تم تو پھر کیوں ہچکیوں پر ہچکیاں آئیں
انہیں روکو یہ کیوں پیغام پر پیغام آتا ہے

یہ ساون یہ گھٹا یہ بجلیاں یہ ٹوٹتی راتیں
بھلا ایسے میں دل والوں کو کب آرام آتا ہے

ادب اے جذبہ بیباک یہ آہ و فغاں کیسی
کہ ایسی زندگی سے موت پرالزام آتا ہے

مدد اے مرگ ناکامی نقاہت کا یہ عالم ہے
بڑی مشکل سے ہونٹوں تک کسی کا نام آتا ہے

خدا رکھے تجھے اے سر زمین شہر خاموشاں
یہیں آکر ہر اک بے چین کو آرام آتا ہے

معاذاللہ مری آنکھوں کے اظہار تنگ ظرفی
ٹپک پڑتے ہیں آنسو جب تمہارا نام آتا ہے

زمانے میں نہیں دلدادہ مہر و وفا کوئی
تجھے دھوکا ہے اے دل کون کس کے کام آتا ہے

کہاں محفل میں مجھ تک بادہ گلفام آتا ہے
جو میرا نام آتا ہے تو خالی جام آتا ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں