Chashm-E-Nam Jaan-E-Shorida

 چشم نم جان شوریدہ کافی نہیں
تہمت عشق پوشیدہ کافی نہیں
آج بازار میں پا بہ جولاں چلو
دست افشاں چلو مست و رقصاں چلو
خاک بر سر چلو خوں بداماں چلو
راہ تکتا ہے سب شہر جاناں چلو
حاکم شہر بھی مجمع عام بھی
تیر الزام بھی سنگ دشنام بھی
صبح ناشاد بھی روز ناکام بھی
ان کا دم ساز اپنے سوا کون ہے
شہر جاناں میں اب با صفا کون ہے
دست قاتل کے شایاں رہا کون ہے
رخت دل باندھ لو دل فگارو چلو
پھر ہمیں قتل ہو آئیں یارو چلو
Chashm-E-Nam Jaan-E-Shorida Kafi Nahin
tohmat-e-ishq-e-poshida kafi nahin
aaj bazar mein pa-ba-jaulan chalo
dast-afshan chalo mast o raqsan chalo
Khak-bar-sar chalo Khun-ba-daman chalo
rah takta hai sab shahr-e-jaanan chalo
hakim-e-shahr bhi majma-e-am bhi
tir-e-ilzam bhi sang-e-dushnam bhi
subh-e-nashad bhi roz-e-nakaam bhi
un ka dam-saz apne siwa kaun hai
shahr-e-jaanan mein ab ba-safa kaun hai
dast-e-qatil ke shayan raha kaun hai
rakht-e-dil bandh lo dil-figaro chalo
phir hamin qatl ho aaen yaro chalo
 

اپنا تبصرہ بھیجیں