Apne Aaqa Ke Madine Ki Taraf Dekhte Hain

Apne Aaqa Ke Madine Ki Taraf Dekhte Hain

Apne Aaqa Ke Madine Ki Taraf Dekhte Hain
Dil ulajhta hai tou seene ki taraf dekhte hain

Ab yeh duniya jaise chahe usay dekhe sar-e-seel
Ham tou bas aik safene ki taraf dekhte hain

Ahd-e-aasoodgi-e-jaan ho keh dour-e-adbaar
Usi rehmat ke khazene ki taraf dekhte hain

Wo jo pal bhar mein sar-e-arsh barin kholta hai
Bas usi noor ke zene ki taraf dekhte hain

Bahr-e-tasdeeq sanad nama nisbat-e-ushaaq
Meher-e-khatam ke nageene ki taraf dekhte hain

Dekhne walon ne dekhe hain wo aashfta mizaj
Jo haram se bhi madine ki taraf dekhte hain

Apne aaqa ke madine ki taraf dekhte hain
Dil ulajhta hai tou seene ki taraf dekhte hain
غزل
اپنے آقا کے مدینے کی طرف دیکھتے ہیں
دل اُلجھتا ہے تو سینے کی طرف دیکھتے ہیں

اب یہ دنیا جسے چاہے اُسے دیکھے سرِسیل
ہم تو بس ایک سفینے کی طرف دیکھتے ہیں

عہدِ آسودگی جاں ہو کہ دورِ ادبار
اُسی رحمت کے خزینے کی طرف دیکھتے ہیں

وہ جو پل بھر میں سرِ عرشِ بریں کھُلتا ہے
بس اُسی نور کے زینے کی طرف دیکھتے ہیں

بہر تصدیق سندنامہ نسبتِ عشاق
مہر خاتم کے نگینے کی طرف دیکھتے ہیں

دیکھنے والوں نے دیکھے ہیں وہ آشفتہ مزاج
جو حرم سے بھی مدینے کی طرف دیکھتے ہیں

اپنے آقا کے مدینے کی طرف دیکھتے ہیں
دل اُلجھتا ہے تو سینے کی طرف دیکھتے ہیں

اپنا تبصرہ بھیجیں