Pehle Mere Khat Ke Uss Ne| Wasi Shah Poetry

Pehle Mere Khat Ke Uss Ne| Wasi Shah Poetry

Pehle Mere Khat Ke Uss Ne
Aik anjane khauf se dar kar
Tukray tukray kar dale

Ab

Aik haseen ehsas ke tabe
Jis ka koi naam nahi hai
Pichhle kitne hi ghanton se
Darwaze ki aut mein chhup kar
Tukray jor rahi hai

Pehle mere khat ke uss ne
Aik anjane khauf se dar kar
Tukray tukray kar dale
نظم
پہلے میرے خط کے اُس نے
ایک انجانے خوف سے ڈر کر
ٹکڑے ٹکڑے کر ڈالے

اب

ایک حسیں احساس کے تابع
جس کا کوئی نام نہیں ہے
پچھلے کتنے ہی گھنٹوں سے
دروازے کی اوٹ میں چھپ کر
ٹکڑے جوڑ رہی ہے

پہلے میرے خط کے اُس نے
ایک انجانے خوف سے ڈر کر
ٹکڑے ٹکڑے کر ڈالے

اپنا تبصرہ بھیجیں