Murshid Please Aaj Mujhe Waqt Dijiye

Murshid Please Aaj Mujhe Waqt Dijiye

Murshid Please Aaj Mujhe Waqt Dijiye
Murshid mein aaj aap ko dukhary sunaon ga

Murshed hamare sath bara zulm ho gaya
Murshed hamary daish main ek jang chir gai

Murshid sabhi sharif sharafat se mar gaye
Murshed hamary zehan giraftar ho gaye

Murshed humari sooch bhi bazari ho gai
Murshid Bahot se mar kar ham bhi mar gaye

Murshed hamein zirra nahi talwar di gai
Murshid hamari zaat par bohtan chhar gaye

Murshed humari zaat palandon mein daab gai
Murshid humary wastay bas aik shakhs tha

Murshed wo aik shakhs bhi taqdeer lay uri
Murshid khuda ki zaat par andha yaqeen tha

Afsoos ab yaqeen bhi andha nahi raha
Murshed mohabataon ke nataij kahan gaye

Murshed meri tu zindgai barbad ho gai
Murshid hamare gaon ke bachaon ne bhi kaha
 
Murshid ko aakhein Aa k sada haal daikh wanj
Murshid hamara koi nahi, bs aap hain
 
Ye mein bhi janta hoon bs acha nahio howa
Murshid mein jal raha hoon hawain na dejiye
Murshid Azaala kijaye, Duain na dejiye
نظم
مرشد پلیز آج مجھے وقت دیجییئے
مرشد میں آج آپکو دکھڑے سناؤں گا

مرشد ہمارے ساتھ بڑا ظلم ہو گیا
مرشد ہمارے دیس میں ایک جنگ چھڑ گئی

مرشد سبھی شریف شرافت سے مر گئے
مرشد ہمارے زہن گرفتار ہو گئے

مرشد ہماری سوچ بھی بازاری ہوگئی
مرشد بہت سے مار کر ہم بھی مر گئے

مرشد ہمیں زیرہ نہیں تلوار دی گئی
مرشد ہماری زات پہ بہتان چڑھ گئے

مرشد ہماری زات پلندوں میں دب گئی
مرشد ہمارے واسطے بس ایک شخص تھا

مرشد وہ ایک شخص بھی تقدیر لے اُڑی
مرشد خدا کی زات پہ اندھا یقین تھا

افسوس اب یقین بھی اندھا نہیں رہا
مرشد محبتوں کے نتائج کہاں گئے

مرشد میری تو زندگی برباد ہوگئی
مرشد ہمارے گاؤں کے بچوں نے بھی کہا

مرشد کو اکھیں آکے ساڈا حال دیکھ ونج
مرشد ہمارا کوئی نہیں بس آپ ہیں

یہ میں بھی جانتا ہوں بس اچھا نہیں ہوا
مرشد میں چل رہا ہوں ہوائیں نہ دیجیئے
مرشد ازالا کیجئے دعائیں نہ دیجیئے

اپنا تبصرہ بھیجیں