Mukhafiz Rosh Raftaga Koi Nahi Hai

Mukhafiz Rosh Raftaga Koi Nahi Hai

Mukhafiz Rosh Raftagah Koi Nahi Hai
Jaha ka mein hoon mera wahaan koi nahi hai

Sitaragah se jo pucha keh us tarf kia hai
Chamk ke bole keh aye jaan-e-jahaan koi nahi hai

Guzishta gaa muhabbat keh khowab likhne ko
Abhi tou main hoon magar bad aza koi nahi hai

Mukhafiz rosh raftagah koi nahi hai
Jaha ka mein hoon mera wahaan koi nahi hai
غزل
مخافظِ روشِ رفتگاہ کوئی نہیں ہے
جہاں کا میں ہوں میرا وہاں کوئی نہیں ہے

ستارگاہ سے جو پوچھا کہ اُس طرف کیا ہے
چمک کے بولے کہ اے جانِ جہاں کوئی نہیں ہے

گزشتہ گاںِ محبت کہ خواب لکھنے کو
ابھی تو میں ہوں مگر بعد ازاں کوئی نہیں ہے

مخافظِ روشِ رفتگاہ کوئی نہیں ہے
جہاں کا میں ہوں میرا وہاں کوئی نہیں ہے
 

اپنا تبصرہ بھیجیں