Yeh Kis Me Bagh Se Uss Shakhs Ko Bula Liya Hai

Yeh Kis Me Bagh Se Uss Shakhs Ko Bula Liya Hai

Yeh Kis Ne Bagh Se Uss Shakhs Ko Bula Liya Hai
Parinday urr gaye pairon ne Moun bana liya hai

Usay pata tha mein chhone mein waqt leta hoon
So uss ne wasal ka dorania barha liya hai

Yeh raat naam nahi le rahi thi katne ka
Chiragh jor ke logon ne din bana liya hai

Darakht chhaon se hat kar bhi aur bohat kuch hai
Yeh kaisi cheez thi aur hum ne kaam kia liya hai

Khurch raha hoon mein deewar par likhe hoye naam
Ajeeb tarah ki ik be basi ne aa liya hai

Yeh kis ne bagh se uss shakhs ko bula liya hai
Parinday urr gaye pairon ne Moun bana liya hai
غزل
یہ کس نے باغ سے اُس شخص کو بلا لیا ہے
پرندے اُڑ گئے پیڑوں نے منہ بنا لیا ہے

اُسے پتا تھا میں چھونے میں وقت لیتا ہوں
سو اُس نے وصل کا دورانیہ بڑھا لیا ہے

یہ رات نام نہیں لے رہی تھی کٹنے کا
چراغ جوڑ کے لوگوں نے دن بنالیا ہے

درخت چھاؤں سے ہٹ کر بھی اور بہت کچھ ہے
یہ کیسی چیز تھی اور ہم نے کام کیا لیا ہے

کھرچ رہا ہوں میں دیوار پر لکھے ہوئے نام
عجیب طرح کی اک بے بسی نے آ لیا ہے

یہ کس نے باغ سے اُس شخص کو بلا لیا ہے
پرندے اُڑ گئے پیڑوں نے منہ بنا لیا ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں