Veeran Hi Kaha Hai Khala Tou Nahi Kaha

Veeran Hi Kaha Hai Khala Tou Nahi Kaha

Poet: Ali Zaryoun
Ghazal
Veeran Hi Kaha Hai Khalaa Tou Nahi Kaha
Pehle bhi keh chuka hun nia tou nahi kaha

Chehre se lag raha hai keh tum kuch udass ho
Mein tumhain nashay main sanaa tou nahi kaha

Roya zaror us ke liye bad-dua nahi ki
Khud ban gaya per us ko bura tou nahi kaha

Veeran hi kaha hai khalaa tou nahi kaha
Pehle bhi keh chuka hun nia tou nahi kaha
غزل
ویران ہی کہا ہے خلا تو نہیں کہا
پہلے بھی کہ چکا ہوں نیا تو نہیں کہا

چہرے سے لگ رہا ہے کہ تم کچھ اداس ہو
میں تمہیں نشے میں صنا تو نہیں کہا

رویا ضرور اُس کے لیے بد دعا نہ کی
خود بن گیا پر اُس کو برا تو نہیں کہا

ویران ہی کہا ہے خلا تو نہیں کہا
پہلے بھی کہ چکا ہوں نیا تو نہیں کہا

اپنا تبصرہ بھیجیں