Suna Hai Ab Wo Aankhen Aur Kisi Ko Ro Rahi Hain|Tehzeeb Hafi Ghazal

Suna Hai Ab Wo Aankhen Aur Kisi Ko Ro Rahi Hain

Ghazal
Suna Hai Ab Wo Aankhen Aur Kisi Ko Ro Rahi Hain
Mere chashmo se koi aur pani bhar raha hai
Bohot majbor ho kar mein teri aankhon se nikla
Khushi se kon apne mulk se bhair raha hai
Galay milna na milna tou teri marzi hai lakin
Tere chehre se lagta hai tera dil kar raha hai
Suna hai ab wo aankhen aur kisi ko ro rahi hain
Mere chashmo se koi aur pani bhar raha hai
غزل
سنا ہے اب وہ آنکھیں اور کسی کو رو رہی ہیں
میرے چشموں سے کوئی اور پانی بھر رہا ہے
بہت مجبور ہو کر میں تیری آنکھوں سے نکلا
خوشی سے کون اپنے ملک سے باہر رہا ہے
گلے ملنا نہ ملنا تو تیری مرضی ہے لیکن
تیرے چہرے سے لگتا ہے تیرا دل کر رہا ہے
سنا ہے اب وہ آنکھیں اور کسی کو رو رہی ہیں
میرے چشموں سے کوئی اور پانی بھر رہا ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں