Shab-E-Khumar Husan Saqi Herat | Best Ghazal

Shab-E-Khumar Husan Saqi Herat | Best Ghazal

Shab-E-Khumar Husan Saqi Herat Mekhana Tha
Aap hi may aap hi kham aap hi paimana tha

Kaaba-o-der kaleesa mi abas dhonda kiye
Dil ka har gosha maqam jalwa jananah tha

Rang laya hai baraye deeda anjaam jo
Shamaaa har har zarrah khaak par parwana tha

Khami zauq nazar thi warna aa nakam ishq
Zarre zarre se numaya jalwa jananah tha

Phir wohi sout tarb afzaa bane firdoos gosh
Jis se ik alam shaheed naghma mastana tha

Deed ke qabil tamasha tha yeh hungam sahar
Shama ka har saans maho matam parwana tha

Fitna mazhab bhi khud beeni ka ik andaz hai
Warna kis ko imtiaz masj-o-botkhana tha

Shab-e-khumar husan saqi herat mekhana tha
Aap hi may aap hi kham aap hi paimana tha
غزل
شب خمار حسن ساقی حیرت میخانہ تھا
آپ ہی مے آپ ہی خم آپ ہی پیمانہ تھا

کعبہ و دیر کلیسا می عبث ڈھونڈا کئے
دل کا ہر گوشہ مقام جلوہ جانانہ تھا

رنگ لایا ہے برائے دیدہ انجام جو
شمع ہر ہر ذرہ خاک پر پروانہ تھا

خامی ذوق نظر تھی ورنہ اے ناکام عشق
ذرے ذرے سے نمایاں جلوہ جانانہ تھا

پھر وہی صوت طرب افزا بنے فردوس گوش
جس سے اک عالم شہید نغمہ مستانہ تھا

دید کے قابل تماشا تھا یہ ہنگام سحر
شمع کا ہر سانس محو ماتم پروانہ تھا

فتنہ مذہب بھی خود بینی کا اک انداز ہے
ورنہ کس کو امتیاز مسج و بتخانہ تھا

شب خمار حسن ساقی حیرت میخانہ تھا
آپ ہی مے آپ ہی خم آپ ہی پیمانہ تھا

اپنا تبصرہ بھیجیں