Seel-E-Junon Sahil Ki Janib Ata Hai

Seel-E-Junon Sahil Ki Janib Ata Hai

Seel-E-Junon Sahil Ki Janib Ata Hai
Khowab shab-e-tareek pe ghalib ata hai

Zara hoon mansoob hawa hoon muhar ke sath
Roshan rehna mujh par wajib ata hai

 

Dil ke tabehe k chute se qissen main
Zikar hazar atraaf-o-jawaneb ata hai

 

Mitti, pani, aag hawa sab es k rafeeq
Jis ko usool-e-farq murateb ata hai

 

Dil rawaiye aur gerye ki tufeeq na ho
Aisa waqt bhi arif sahib ata hai

 

Seel-e-junon sahil ki janib ata hai
Khowab shab-e-tareek pe ghalib ata hai
غزل 
سیلِ جنوں ساحل کی جانب آتا ہے
خواب شبِ تاریک پہ غالب آتا ہے

ذرہ ہوں منسوب ہوا ہوں مہر کے ساتھ
روشن رہنا مجھ پر واجب آتا ہے

دل کی تباہی کے چھوٹے سے قصے میں
ذکرہزار اطراف و جوانب آتا ہے

مٹی پانی آگ ہوا سب اس کے رفیق
جس کو اصولِ فرق مراتب اتا ہے

دل رویے اور گریے کی توفیق نہ ہو
ایسا وقت بھی عارف صاحب آتا ہے

سیلِ جنوں ساحل کی جانب آتا ہے
خواب شبِ تاریک پہ غالب آتا ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں