Sab Kar Lena Lamhay Zaya Mat Karna

Ghazal
Sab Kar Lena Lamhe Zaya Mat Karna
Galat jagah per jazbay zaya mat karna

Jin ki aankhain peyari , baatin jhooti hun
Un ki khatir sapnay zaya mat karna

Saada hun aur brands passand nahi mujhko
Mujh per apne paisy zaya mat karna

Jin logo ko khamoshi ki qadar na ho
Un logo per lahjay zaya mat karna

Ishq tou niyat ki suchi dekhta hai
Dil na jhokay to sajday zaya mat karna

Rozi roti des main bhi mil sakti hai
Door bhej ke rishtay zaya mat karna

Sab kar lena lamhe zaya mat karna
Galat jagah per jazbay zaya mat karna
 
غزل
سب کر لینا لمحے ضائع مت کرنا
غلط جگہ پر جزبے ضائع مت کرنا

جن کی آنکھیں پیاری، باتیں جھوٹی ھوں
ان کی خاطر سپنے ضائع مت کرنا

سادہ ہوں ، اور برینڈز پسند نہیں مجھکو
مجھ پر اپنے پیسے ضائع مت کرنا

جن لوگوں کو خاموشی کی قدر نہ ھو
ان لوگوں پر لہجے ضائع مت کرنا

عشق تو نیت کی سچائی دیکھتا ہے
دل نہ جھکے تو سجدے ضائع مت کرنا

روزی روٹی دیس میں بھی مل سکتی ہے
دور بھیج کے رشتے ضائع مت کرنا

سب کر لینا لمحے ضائع مت کرنا
غلط جگہ پر جزبے ضائع مت کرنا

اپنا تبصرہ بھیجیں