Prai nined mein sone ka tajurba kar ky

پرائی نیند میں سونے کا تجربہ کر کے
میں خوش نہیں ہوں تجھے خود میں مبتلا کر کے

اصولی طور پہ مر جانا چاہیے تھا مگر
مجھے سکون ملا ہے تجھے جدا کر کے

یہ کیوں کہا کہ تجھے مجھ سے پیار ہو جائے
تڑپ اٹھا ہوں ترے حق میں بد دعا کر کے

میں چاہتا ہوں خریدار پر یہ کھل جائے
نیا نہیں ہوں رکھا ہوں یہاں نیا کر کے

میں جوتیوں میں بھی بیٹھا ہوں پورے مان کے ساتھ
کسی نے مجھ کو بلایا ہے التجا کر کے

بشر سمجھ کے کیا تھا نا یوں نظر انداز
لے میں بھی چھوڑ رہا ہوں تجھے خدا کر کے

تو پھر وہ روتے ہوئے منتیں بھی مانتے ہیں
جو انتہا نہیں کرتے ہیں ابتدا کر کے

بدل چکا ہے مرا لمس نفسیات اس کی
کہ رکھ دیا ہے اسے میں نے ان چھوا کر کے

منا بھی لوں گا گلے بھی لگاؤں گا میں علیؔ
ابھی تو دیکھ رہا ہوں اسے خفا کر کے

Prai nind mein sone ka tajurba kar ky
Main khush nahi hun tujhy khud mein mubtla kar ky
 
Asooli tor pe mar jana chshiye tha mujhy
Mujhy sakun mila hai tujhy juda kar ky
 
Yeh ku kaha keh tujhy mujh se pyar ho jay
Tradap utha hunt ere aq mein badua kar ky
 
Main chahta hun khreedar peh yeh khul jay
Naya nahi hun rakha hun yahan naya kar ky
 
Main jootiyun mein bhi betha hun poore maan ky sath
Kisi ne mujh ko bulaya hai ilteja kar ky
 
Bashar smajh ky kiya than a yu nazar andaz
Le main bhi chodh raha hun  tujhy khuda kar ky
 
To phir who roty huy manten bhi manty hain
Jo inteha nahi karty hain ibtida kar ky
 
Badal chuka hai mera lams nafsiyat os ki
Keh rakh diya hai maine ose un chua kar ky
 
Mana bhi lu ga galy bhi lgaon ga main Ali
Abhi to dekh raha hu nose khafa kar ky

اپنا تبصرہ بھیجیں