Nigah-e-Faqr Mein Shan-e-Sikandari Kya Hai

نگاہ فقر میں شان سکندری کیا ہے
خراج کی جو گدا ہو وہ قیصری کیا ہے
بتوں سے تجھ کو امیدیں خدا سے نومیدی
مجھے بتا تو سہی اور کافری کیا ہے
فلک نے ان کو عطا کی ہے خواجگی کہ جنہیں
خبر نہیں روش بندہ پروری کیا ہے
فقط نگاہ سے ہوتا ہے فیصلہ دل کا
نہ ہو نگاہ میں شوخی تو دلبری کیا ہے
اسی خطا سے عتاب ملوک ہے مجھ پر
کہ جانتا ہوں مآل سکندری کیا ہے
کسے نہیں ہے تمنائے سروری لیکن
خودی کی موت ہو جس میں وہ سروری کیا ہے
خوش آ گئی ہے جہاں کو قلندری میری
وگرنہ شعر مرا کیا ہے شاعری کیا ہے
Nigah.e.Faqr Men Shan.e.Sikandri Kya hai
Kharaj Ki Jo Gada Hai Who Qaisri Kya Hai

Buton Se Tujh Ko Umeeden Khuda Se Na Umeedi
Mujhy Bta To Sahi R Kafri Kya Hai

Falak Ne On Ko Ata Ki Hai Khajgi Keh Jinhen
Khabar Nahi Rawash.e.Banda Parwri Kya Hai

Faqat Nigah Se Hota Hai Faisla Dil Ka
Na Ho Nigah Mein Shokhi To Dilbari Kya Hai

Isi Khata Se Atab Mlook Hai Mujh Par
Keh Janta Hun Ma aal.e.Sikandri Kya Hai

Kise Nahi Hai Tamana.e.Sarwri Laikin
Khudi Ki Maot Ho Jis Mein Who Serwri Kya Hai

Khush Aa Gaii Hai Jahan Ko Qalandi Meri
Wagarna Sher Mera Kya Hai Shayri Kya Hai

اپنا تبصرہ بھیجیں