Koi Saya Achay Saiyen Ghoop Bahut Hai

Koi Saya Achay Saiyen Ghoop Bahut Hai

Koi Saya Achay Saiyen Dhoop Bahut Hai
Mar jaunga achay saiyen dhoop bahut hai

Sanoli rut mein khwab jale to aankh khuli hai
Mein ne dekha achay saiyen dhoop bahut hai

Ab ke mausam yahi rahe to mar jayega
Ik ik lamha achay saiyen dhoop bahut hai

Koi thikana bakhsh usay jo ghoom raha hai
Mara mara achay saiyen dhoop bahut hai

Aik tu dil ke raste bhi dushwar bahut hain
Phir mein pyasa achay saiyen dhoop bahut hai

Koi saya aag mein jalne walon par bhi
Koi parwa achay saiyen dhoop bahut hai

Raat ko ik pagal ne shahr ki deewaron par
Khoon se likha achay saiyen dhoop bahut hai

Achay saiyen maan liya duniya hai roshan
Lekin yeh kya achay saiyen dhoop bahut hai

Kon tha jis se dil ki halat kehh paata mein
Kis se kehta achay saiyen dhoop bahut hai

Koi saya achay saiyen dhoop bahut hai
Mar jaunga achay saiyen dhoop bahut hai
غزل
کوئی سایا اچھے سائیں دھوپ بہت ہے
مر جاؤں گا اچھے سائیں دھوپ بہت ہے

سانولی رت میں خواب جلے تو آنکھ کھلی ہے
میں نے دیکھا اچھے سائیں دھوپ بہت ہے

اب کے موسم یہی رہے تو مر جائے گا
اک اک لمحہ اچھے سائیں دھوپ بہت ہے

کوئی ٹھکانہ بخش اُسے جو گھوم رہا ہے
مارا مارا اچھے سائیں دھوپ بہت ہے

ایک تو دل کے رستے بھی دشوار بہت ہیں
پھر میں پیاسا اچھے سائیں دھوپ بہت ہے

کوئی سایا آگ میں جلنے والوں پر بھی
کوئی پروا اچھے سائیں دھوپ بہت ہے

رات کو اک پاگل نے شہر کی دیواروں پر
خون سےلکھا اچھے سائیں دھوپ بہت ہے

اچھے سائیں مان لیا دنیا ہے روشن
لیکن یہ کیا اچھے سائیں دھوپ بہت ہے

کون تھا جس سے دل کی حالت کہہ پاتا میں
کس سے کہتا اچھے سائیں دھوپ بہت ہے

کوئی سایا اچھے سائیں دھوپ بہت ہے
مر جاؤں گا اچھے سائیں دھوپ بہت ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں