Kis Liye Mere Khayal Peh Dharne| Shikwa Shayari

Kis Liye Mere Khayal Peh Dharne| Shikwa Shayari

Kis Liye Mere Khayal Peh Dharne Dena
Sher utarta hai tou phir kyun nah utarne dena

Mujh ko duniya mein gunahon ki ijazat de de
Jo yahan karlon woh Jannat mein nah karne dena

Yeh dileri bare nuqsan kya karti hai
Bachay bachpan mein agar darte hoon darne dena

Iss ko tableegh nah karna jo bahut rota ho
Zulam mat karna khudara usay marne dena

Aik qanoon banaya hai so khush rehta hoon
Jo bhi wado se mukar jaye mukarne dena

Dil mohalle koi aaye guzar jaye rahe
Iss mohalle koi kuch bhi kare karne dena

Mera har faisla ik achi khabar lata hai
Mein bikharne bhi lagon mujhe ko bikharne dena

Kis liye mere khayal peh dharne dena
Sher utarta hai tou phir kyun nah utarne dena
غزل
کس لیے میرے خیالات پہ دھرنے دینا
شعر اترتا ہے تو پھر کیوں نہ اترنے دینا

مجھ کو دنیا میں گناہوں کی اجازت دے دے
جو یہاں کرلوں وہ جنت میں نہ کرنے دینا

یہ دلیری بڑے نقصان کیا کرتی ہے
بچے بچپن میں اگر ڈرتے ہوں ڈرنے دینا

اس کو تبلغ نہ کرنا جو بہت روتا ہو
ظلم مت کرنا خدارا اسے مرنے دینا

ایک قانون بنایا ہے سو خوش رہتا ہوں
جو بھی وعدوں سے مکر جائے مکرنے دینا

دل محلے ہے کوئی آئے گزر جائے رہے
اس محلے کوئی کچھ بھی کرے کرنے دینا

میرا ہر فیصلہ اک اچھی خبر لاتا ہے
میں بکھرنے بھی لگوں مجھ کو بکھرنے دینا

کس لیے میرے خیالات پہ دھرنے دینا
شعر اترتا ہے تو پھر کیوں نہ اترنے دینا

اپنا تبصرہ بھیجیں