Khudi Ka Sirr E Nihan La Ilaha Illallah

نظم:خودی
خودی کا سر نہاں لا الہ الا اللہ
خودی ہے تیغ فساں لا الہ الا اللہ

یہ دور اپنے براہیم کی تلاش میں ہے
صنم کدہ ہے جہاں لا الہ الا اللہ

کیا ہے تو نے متاع غرور کا سودا
فریب سود و زیاں لا الہ الا اللہ

یہ مال و دولت دنیا یہ رشتہ و پیوند
بتان وھم و گماں لا الہ الا اللہ

خرد ہوئی ہے زمان و مکاں کی زناری
نہ ہے زماں نہ مکاں لا الہ الا اللہ

یہ نغمہ فصل گل و لالہ کا نہیں پابند
بہار ہو کہ خزاں لا الہ الا اللہ

اگرچہ بت ہیں جماعت کی آستینوں میں
مجھے ہے حکم اذاں لا الہ الا اللہ
Nazam:Khudi
Khudi Ka Sirr-E-Nihan La-Ilaha-Illallah
Khudi hai tegh fasan la-ilaha-illallah
 
ye daur apne barahim ki talash mein hai
sanam-kada hai jahan la-ilaha-illallah
 
kiya hai tu ne mata-e-ghurur ka sauda
fareb-e-sud-o-ziyan la-ilaha-illallah
 
ye mal-o-daulat-e-duniya ye rishta o paiwand
butan-e-wahm-o-guman la-ilaha-illallah
 
khirad hui hai zaman o makan ki zunnari
na hai zaman na makan la-ilaha-illallah
 
ye naghma fasl-e-gul-o-lala ka nahin paband
bahaar ho ki khizan la-ilaha-illallah
 
agarche but hain jamaat ki aastinon mein
mujhe hai hukm-e-azan la-ilaha-illallah

اپنا تبصرہ بھیجیں