Ek Hunar Tha Kamal Tha Kya Tha| Parveen Poetry

Ek Hunar Tha Kamal Tha Kya Tha| Parveen Poetry

Ek Hunar Tha Kamal Tha Kya Tha
Mujh mein tera jamal tha kia tha

Tere jane peh ab ke kuchh nah kaha
Dil mein dar tha malal tha kia tha

Burq ne mujh ko kar diya roshan
Tera aaks jamal tha kia tha

Hum tak aaya to meher lutf-o-karam
Tera waqt zawal tha kia tha

Jis ne tehh se mujhe uchhal diya
Dobne ka khayal tha kia tha

Jis peh dil sare ahd bhool gaya
Bhoolne ka sawal tha kia tha

Titliyan thay hum aur qaza ke pass
Surkh phoolun ka jal tha kia tha

Ek hunar tha kamal tha kya tha
Mujh mein tera jamal tha kia tha
غزل
اِک ہنر تھا کمال تھا کیا تھا
مجھ میں تیرا جمال تھا کیا تھا

تیرے جانے پہ اب کے کچھ نہ کہا
دل میں ڈر تھا ملال تھا کیا تھا

برق نے مجھ کو کر دیا روشن
تیرا عکس جمال تھا کیا تھا

ہم تک آیا تو مہر لطف و کرم
تیرا وقت زوال تھا کیا تھا

جس نے تہہ سے مجھے اُچھال دیا
ڈوبنے کا خیال تھا کیا تھا

جس پہ دل سارے عہد بھول گیا
بھولنے کا سوال تھا کیا تھا

تتلیاں تھے ہم اور قضا کے پاس
سرخ پھولوں کا جال تھا کیا تھا

اِک ہنر تھا کمال تھا کیا تھا
مجھ میں تیرا جمال تھا کیا تھا

اپنا تبصرہ بھیجیں