Ek Aaur Ghar Bhi Tha Mera

 اک اور گھر بھی تھا مرا 

جس میں میں رہتا تھا کبھی 

اک اور کنبہ تھا مرا 

بچوں بڑوں کے درمیاں 

اک اور ہستی تھی مری 

کچھ رنج تھے کچھ خواب تھے 

موجود ہیں جو آج بھی 

وہ گھر جو تھی بستی مری 

یہ گھر جو ہے بستی مری 

اس میں بھی تھی ہستی مری 

اس میں بھی ہے ہستی مری 

اور میں ہوں جیسے کوئی شے 

دو بستیوں میں اجنبی

Ek Aaur Ghar Bhi Tha Mera

jis mein main rahta tha kabhi 

ek aur kumba tha mera 

bachchon badon ke darmiyan 

ek aur hasti thi meri 

kuchh ranj the kuchh khwab the 

maujud hain jo aaj bhi 

wo ghar jo thi basti meri 

ye ghar jo haibasti  meri 

us mein bhi thi hasti meri 

is mein bhi hai hasti meri 

aur main hun jaise koi shai 

do bastiyon mein ajnabi 

اپنا تبصرہ بھیجیں