Bujhi Aankhon Mein Kirnay Bhar Rahi Ho Kon Ho

Bujhi Aankhon Mein Kirnay Bhar Rahi Ho Kon Ho

Ghazal
Bujhi Aankhon Mein Kirnay Bhar Rahi Ho Kon Ho Tum
Meri neendon ko roshan kar rahi ho kon ho tum
 
Mujh jaise ghar mein tou shetan bhi ata nahi hai
Tum itne din mere andar rahi ho kon ho tum
 
Mein jis ki yaad mein agwa howa hun wo kahan hai
Mera tawaan tum kyu bhar rahi ho kon ho tum
 
Bharay majmay se kamray tak tum hi lai ho mujhko
Ab es tanhai se khud dar rahi ho kon ho tum
 
Bujhi aankhon mein kirnay bhar rahi ho kon ho tum
Meri neendon ko roshan kar rahi ho kon ho tum
 
غزل
بجھی آنکھوں میں کرنیں بھر رہی ہو کون ہو تم
میری نیندوں کو روشن کر رہی ہو کون ہو تم
 
مجھ جیسے گھر میں تو شیطان بھی آتا نہیں ہے
تم اتنے دن میرے اندر رہی ہو کون ہو تم
 
میں جس کی یاد میں اغوا ہوا ہوں وہ کہاں ہے
میرا تاوان تم کیوں بھر رہی ہو کون ہو تم
 
بھرے مجمے سے کمرے تک تم ہی لائی ہو مجھ کو
اب اس تنہائی سے خود ڈر رہی ہو کون ہو تم
 
بجھی آنکھوں میں کرنیں بھر رہی ہو کون ہو تم
میری نیندوں کو روشن کر رہی ہو کون ہو تم

اپنا تبصرہ بھیجیں