Behnor Ki Goad Mein Jaise Kinara Saath Rehta Hai

Behnor Ki Goad Mein Jaise Kinara Saath Rehta Hai

Behnor Ki Goad Mein Jaise Kinara Saath Rehta Hai
Kuch aise hi tumhara aur hamara saath rehta hai

Mohabbat ho ke nafrat ho ussi se mashwara hoga
Meri har kaifiyat mein istikhara saath hota hai

Safar mein aain mumkin hai mein khud ko chhor do lekin
Duayen karne walon ka sahara saath rehta hai

Mere maula ne mujh ko chahtun ki saltanat de di
Magar pehli mohabbat ka khasara saath rehta hai

Agar Sayyad mere labb par mohabbat hi mohabbat hai
Tu phir bhi kis liye nafrat ka dhara saath rehta hai

Behnor ki goad mein jaise kinara saath rehta hai
Kuch aise hi tumhara aur hamara saath rehta hai
غزل
بھنور کی گود میں جیسے کنارہ ساتھ رہتا ہے
کچھ ایسے ہی تمہارا اور ہمارا ساتھ رہتا ہے

محبت ہو کے نفرت ہو اُسی سے مشورہ ہوگا
مری ہر کیفیت میں استخارہ ساتھ ہوتا ہے

سفر میں عین ممکن ہے میں خود کو چھوڑ دوں لیکن
دعائیں کرنے والوں کا سہارا ساتھ رہتا ہے

مرے مولا نے مجھ کو چاہتوں کی سلطنت دے دی
مگر پہلی محبت کا خسارہ ساتھ رہتا ہے

اگر سید مرے لب پر محبت ہی محبت ہے
تو پھر بھی کس لیے نفرت کا دھارا ساتھ رہتا ہے

بھنور کی گود میں جیسے کنارہ ساتھ رہتا ہے
کچھ ایسے ہی تمہارا اور ہمارا ساتھ رہتا ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں