Zindagi Khwab Mein Ronuma Hone Wala

Zindagi Khwab Mein Ronuma Hone Wala

Zindagi Khwab Mein Ronuma Hone Wala
Koi Hadsa Tou Nahi Hai
Keh jis ke nah hone aur hone ka ehsas bhi
Subah ki dhoop mein kamhla jaye

Phir iss ke hone ki kia aziyat
Nah iss ke nah hone ka dukh

Apne chehre ki gehri lakeeron mein
Ik tajurbe ka nishan ban ke zinda rahe

Zindagi khwab mein ronuma hone wala
Koi hadsa tou nahi hai

Jo socho tou hai
Aur na socho nahi hai

Zindagi aaina hai
Keh jaise hi hum ko
Koi lamha chho ke guzar jata hai
Lams ki gehri haddat se
Woh lamha
Chehre par apne nishan chhor jata hai

Lamhe guzarte hain
Chehre peh bhi lams ke
Yeh nishan barhte jate hain

Ik waqt aata hai
Woh sare lamhe
Jo darasal sab saneha hain
Jo hum par guzarte hain

Aaine peh naqash ho jate hain
Aur aaine mein
Jhuriyon ke siwa
Kuchh nazar tak bhi aata nahi

Zindagi khwab mein ronuma hone wala
Hadsa tou nahi hai
Keh jis ke nah hone aur hone ka ehsas bhi
Subah tak nah rahe
نظم
زندگی خواب میں رونما ہونے والا
کوئی حادثہ تو نہیں ہے
کہ جس کے نہ ہونے اور ہونے کا احساس بھی
صبح کی دھوپ میں کمھلا جائے

پھر اس کے ہونے کی کوئی اذیت
نہ اس کے نہ ہونے کا دکھ

اپنے چہرے کی گہری لکیروں میں
اک تجربے کا نشان بن کے زندہ رہے

زندگی خواب میں رونما ہونے والا
کوئی حادثہ تو نہیں ہے

جو سوچو تو ہے
اور نہ سوچو نہیں ہے

زندگی آئنہ ہے
کہ جیسے ہی ہم کو
کوئی لمحہ چھو کے گزر جاتا ہے
لمس کی گہری حدت سے
وہ لمحہ
چہرے پر اپنے نشان چھوڑ جاتا ہے

لمحے گزرتے ہیں
چہرے پہ بھی لمس کے یہ نشاں بڑھتے جاتے ہیں

اک وقت آتا ہے
وہ سارے لمحے
جو دراصل سب سانحے ہیں
جو ہم پر گزر تے ہیں

آئینے پہ نقش ہو جاتے ہیں
اور آئینے میں
جھریوں کے سوا
کچھ نظر تک بھی آتا نہیں

زندگی خواب میں رونما ہونے والا
حادثہ تو نہیں ہے
کہ جس کے نہ ہونے اور ہونے کا احساس بھی
صبح تک نہ رہے

اپنا تبصرہ بھیجیں