Wehshat-E-Dil Ko Reh-E-Sabar Peh Lanay Walay

Wehshat-E-Dil Ko Reh-E-Sabar Peh Lanay Walay

Wehshat-E-Dil Ko Reh-E-Sabar Peh Lanay Walay
Aye khuda jeetay rahen shair sunane walay

Faida dhoodnay walon se ulajh parte hain
Hum tere hejr mein nuqsaan uthane walay
 
Ek jagah ruk zamen aur utarnay de mujhe
Kurrah-e-arz ko tezi se ghumanay walay
 
Ab to pewand hain baqi nah nishan, dekh to lo
Yunhi bare aaye mera zakhm dukhane walay
 
Khush mujhe dekh ke afsurda howa acha hai
Qehqehay thay hi mere aag laganay walay
 
Woh mera rab hai jo ghafar bhi rehman bhi hai
Aye mujhe khauf zada karne daranay walay
 
Teri khwahish hai agar tark-e-talluq to baja
Hum to har hal mein hain sath nibhanay walay
 
Weshat-e-dil ko reh-e-sabar peh lanay walay
Aye khuda jeetay rahen shair sunane walay
غزل
وحشتِ دل کو رہِ صبر پہ لانے والے
اے خدا جیتے رہیں شعر سنانے والے

فائدہ ڈھونڈنے والوں سے اُلجھ پڑتے ہیں
ہم ترے ہجر میں نقصان اُٹھانے والے

اک جگہ روک زمیں اور اُترنے دے مجھے
کرہ ء ارض کو تیزی سے گھمانے والے

اب تو پیوند ہیں باقی نہ نشاں، دیکھ تو لو
یو نہی، بڑے آئے مرا زخم دُکھانے والے

خوش مجھے دیکھ کے افسردہ ہوا اچھا ہے
قہقہے تھے ہی مرے آگ لگانے والے

وہ مرا رب ہے جو غفار بھی رحمان بھی ہے
اے مجھے خوفزدہ کرنے ، ڈرانے والے

تیری خواہش ہے اگر ترکِ تعلق تو بجا
ہم تو ہر حال میں ہیں ساتھ نبھانے والے

وحشتِ دل کو رہِ صبر پہ لانے والے
اے خدا جیتے رہیں شعر سنانے والے
Poet: Komal Joya

اپنا تبصرہ بھیجیں