Uske Haatho Mein Jo Khanjar Hai Zyada Tez Hai

اس کے ہاتھوں میں جو خنجر ہے زیادہ تیز ہے
اور پھر بچپن سے ہی اس کا نشانہ تیز ہے
جب کبھی اس پار جانے کا خیال آتا مجھے
کوئی آہستہ سے کہتا تھا کہ دریا تیز ہے
آج ملنا تھا بچھڑ جانے کی نیت سے ہمیں
آج بھی وہ دیر سے پہنچا ہے کتنا تیز ہے
اپنا سب کچھ ہار کے لوٹ آئے ہو نا میرے پاس
میں تمہیں کہتا بھی رہتا تھا کہ دنیا تیز ہے
آج اس کے گال چومیں ہیں تو اندازہ ہوا
چائے اچھی ہے مگر تھوڑا سا میٹھا تیز ہے
Os ke hathon mein jo khanjar hai ziada tezz hai
Aur phir bchpan se he us ka nishana tezz hai

Jab kabhi us paar jane ka khyal aata mujhe
Koi aahista se kehta tha keh darya tez hai

Aaj milna tha bichdh jane ki niyyat se hamen
Aaj bhi wo der se pauncha hai kitbna tez hai

Apna sbh kuch haar ke laot ay ho na mere pas
Main tumhen kehta bhi rehta tha keh duniya tez hai

Aaj us keg aal choome hain to andaza hua hai
Chai achi hai mgar thora sa meetha tez hai

اپنا تبصرہ بھیجیں