Mujhko Insano Hamdardi Hai Nasihat Hai

Mujhko Insano Hamdardi Hai Nasihat Hai

Mujhko Insano Se Hamdardi Ki Nasihat Hai
Kyu keh es dour mein be-charon ki aqliyat hai

Loat aao mere logo mera dil phat jaye ga
Youm-e-ashora ki soorat koi kafiyat hai

Dekhta rehta hoon us chehray ko khamoshi se
Sochta rehta hoon phir jo meri hasiyat hai

Kaisi azadi hai agar qawanin chalain
Puch guch kaisi agar tan meri malkiyat hai

Mujhko insano se hamdardi ki nasihat hai
Kyu keh es dour mein be- charon ki aqliyat hai
غزل
مجھکو انسانوں سے ہمدردی ہے نصیحت ہے
کیونکہ اس دور میں بے چارو کی اقلیت ہے

لوٹ آؤ میرے لوگوں میرا دل پھٹ جائے گا
یومِ عاشور کی صورت کوئی کفیت ہے

دیکھتا رہتا ہوں اُس چہرے کو خاموشی سے
سوچتا رہتا ہوں پھر جو میری حثیت ہے

کیسی آزادی ہے اگر تیرے قوانین چلیں
پوچھ کچھ کیسی اگر تن میری ملکیت ہے

مجھکو انسانوں سے ہمدردی ہے نصیحت ہے
کیونکہ اس دور میں بے چارو کی اقلیت ہے 

اپنا تبصرہ بھیجیں