Mujh Ko Phir Yaad Aata Hai Mere Watan

Mujh Ko Phir Yaad Aata Hai Mere Watan

Mujh Ko Phir Yaad Aata Hai Mere Watan
Mein ne jis roz pehna tera perhan

Meri maa ne kaha tha mujhe chum kar
Rah haq hai mere laal chal jhum kar
 
Apni jaan aur dil se jala kar wafa ke diye
Mein ne janma hai tujh ko watan ke liye
 
Mujh se kehne lagi to meri jaan hai
Jaan hasab-e-nisab muslman hai
 
Jab namaz jihad watan ho ada
To mile sab ko pehli safun mein khara
 
Jab zamen watan kar rahi ho wuzu
Paish karna mere laal apna lahoo
 
Aur kehna watan to hamesha jiye
Mein ne janma hai tujh ko watan ke liye
 
Jaan pehle bhi war gaye pyaar par
Khoon sajta raha tere rukhsar par
 
Mujh se pehle bhi thay jo nibhate rahe
Jaan lutate rahe sar katate rahe
 
Mein ne seenchi hain rukh peh tere dalian
Mein ne ki hain watan teri rakhwalian
 
Maa ko mein ne shahadat ke tohfay diye
Uss ne janma hai mujh ko watan ke liye
 
Mujh ko phir yaad aata hai mere watan
Mein ne jis roz pehna tera perhan
نظم
مجھ کو پھر یاد آتا ہے میرے وطن
میں نے جس روز پہنا تیرا پیرہن

میری ماں نے کہا تھامجھے چوم کر
راہ حق ہے میرے لال چل جھوم کر

اپنی جاں اور دل سے جلا کر وفا کے دیے
میں نے جنما ہے تجھ کو وطن کے لئے

مجھ سے کہنے لگی تو میری جان ہے
جان حسب نصاب مسلمان ہے

جب نماز جہاد وطن ہو ادا
تو ملے سب کو پہلی صفوں میں کھڑا

جب زمین وطن کر رہی ہو وضو
پیش کرنا میرے لال اپنا لہو

اور کہنا وطن تو ہمیشہ جیے
میں نے جنما ہے تجھ کو وطن کےلیے

جان پہلے بھی وار گئے پیار پر
خون سجتا رہا تیرے رخسار پر

مجھ سے پہلے بھی تھے جو نبھاتے رہے
جاں لٹاتے رہے سر کٹاتے رہے

میں نے سینچی ہیں رخ پہ تیرے ڈالیاں
میں نے کی ہیں وطن تیری رکھوالیاں

ماں کو میں نے شہادت کے تحفے دیے
اس نے جنما ہے مجھ کو وطن کے لیے

مجھ کو پھر یاد آتا ہے میرے وطن
میں نے جس روز پہنا تیرا پیرہن

اپنا تبصرہ بھیجیں