Khub-Surat Zindagi Ko Humne Kaise

خوبصورت زندگی کو ہم نے کیسےگزارا

آج کا دن کیسے گزرے گا کل گزرے گا کیسے 

کل جو پریشانی میں بیتا وہ بھولے گا کیسے 

کتنے دن ہم اور جییں گے کام ہیں کتنے باقی 

کتنے دکھ ہم کاٹ چکے ہیں اور ہیں کتنے باقی 

خاص طرح کی سوچ تھی جس میں سیدھی بات گنوا دی 

چھوٹے چھوٹے وہموں ہی میں ساری عمر بتا د

Khub-Surat Zindagi Ko Humne Kaise Guzara

aaj ka din kaise guzrega kal guzrega kaise 

kal jo pareshani mein bita wo bhulega kaise 

kitne din hum aur jiyenge kaam hain kitne baqi 

kitne dukh hum kat chuke hain aur hain kitne baqi 

khas tarah ki soch thi jis mein sidhi baat ganwa di 

chhote chhote wahmon hi mein sari umar bita d

اپنا تبصرہ بھیجیں