Hum To Aap Se Achi Batein Karte Hain| Ghazal

Hum To Aap Se Achi Batein Karte Hain| Ghazal

Hum To Aap Se Achi Batein Karte Hain
Aap hi hum se aisi batein karte hain

Milne par chup lag jati hai dono ko
Phone peh achi khasi batein karte hain

Log tou karte hoongay us ke bare mein
Par jo shahr ke darzi batein karte hain

Bin dekhe iman nahi la sakta mein
Aur woh ghair yaqeeni batein karte hain

Peer faqeer tou chup hi rehte hain mazkoor
Duniya daar hi deni batein karte hain

Hum to aap se achi batein karte hain
Aap hi hum se aisi batein karte hain
غزل
ہم تو آپ سے اچھی باتیں کرتے ہیں
آپ ہی ہم سے ایسی باتیں کرتے ہیں

ملنے پر چپ لگ جاتی ہے دونوں کو
فون پہ اچھی خاصی باتیں کرتے ہیں

لوگ تو کرتے ہوں گے اُس کے بارے میں
پر جو شہر کے درزی باتیں کرتے ہیں

بن دیکھے ایمان نہیں لا سکتا میں
اور وہ غیر یقینی باتیں کرتے ہیں

پیر فقیر تو چپ ہی رہتے ہیں مذکور
دنیا دار ہی دینی باتیں کرتے ہیں

ہم تو آپ سے اچھی باتیں کرتے ہیں
آپ ہی ہم سے ایسی باتیں کرتے ہیں

اپنا تبصرہ بھیجیں