Har Pal Dehaan Mein Basne Walay Log Afsane Ho

Har Pal Dehaan Mein Basne Walay Log Afsane Ho

Har Pal Dehaan Mein Basne Walay Log Afsane Ho Jate Hain
Aankhen borhi ho jati hain khawab porane ho jate hain

Sari baat tallaq wali jazbon kisuchi tak hai
Meil dilion mein aa jaye tu ghar verane ho jate hain
 
Manzar manzar khul uthti hai Perahan ki qaus-e-qaza
Mosam tere hans parhane se aur sohane ho jate hain
 
Jhonprion mein har ek talkhi paida hotay hi mil jati hai
Asi liye to waqt se pehle tafil siyane ho jate hain
 
Mosam-e-ishq ki aht se hi har aik cheez badal jati hai
Raatin pagal kar deti hain din deewane ho jatay hain
 
Duniya ke es shoor ne amjad kia kia ham se cheen leya hai
Khud se baat kiye bhi ab tou kai zamane ho jatay hain
 
Har pal dehaan mein basne walay log afsane ho jate hain
Aankhen borhi ho jati hain khawab porane ho jate hain
غزل
ہر پل دھیان میں بسنے والے لوگ افسانے ہو جاتے ہیں
آنکھیں بوڑھی ہو جاتی ہیں خواب پرانے ہو جاتے ہیں
 
ساری بات تعلق والی جزبوں کی سچائی تک ہے
میل دلوں میں آ جائے تو گھر ویرانے ہو جاتے ہیں
 
منظر منظر کھل اُٹھتی ہے پراہن کی قوسِ قزاح
موسم تیرے ہنس پڑنے سے اور سہانے ہوجاتے ہیں
 
جھونپڑیوں میں ہراک تلخی پیدا ہوتے ہی مل جاتی ہے
اسی لیے تو وقت سےپہلے طِفل سیانے ہو جاتے ہیں
 
موسم عشق کی آہٹ سے ہی ہر ایک چیز بدل جاتی ہے
راتیں پاگل کر دیتی ہیں دن دیوانے ہو جاتے ہیں
 
دنیا کے اس شور نے امجدؔ کیا کیا ہم سے چھین لیا ہے
خود سے بات کیے بھی اب تو کئی زمانے ہو جاتے ہیں
 
ہر پل دھیان میں بسنے والے لوگ افسانے ہو جاتے ہیں
آنکھیں بوڑھی ہو جاتی ہیں خواب پرانے ہو جاتے ہیں

اپنا تبصرہ بھیجیں