Dil Ko Tere Dhyan Mein Rakha | Noon Meem Danish| dard e dil shayari urdu

Dil Ko Tere Dhyan Mein Rakha | Noon Meem Danish

Dil Ko Tere Dhyan Mein Rakha
Shor sone makan mein rakha

Har tarf aaina bichaye aur
Aik chehra jahan mein rakha

Aik aanso chupaya mitti mein
Ik samandar makan mein rakha

Aik mohabbat jagayi seene mein
Aag ko khakadan mein rakha

Jaan rakhi tumhari chokhat par
Dil ko tere aman mein rakha

Dhoop paheli hoi thi aankhon mein
Khwab ko saibaan mein rakha

Pawon ki be sabaat-o-wehshat ko
Gardish aasman mein rakha

Khak hone talak mere dil ne
Mujh ko weham-o-guman mein rakha

Dil ko tere dhyan mein rakha
Shor sone makan mein rakha
غزل
دل کو تیرے دھیان میں رکھا
شور سونے مکان میں رکھا

ہر طرف آئنہ بچھائے اور
ایک چہرہ جہان میں رکھا

ایک آنسو چھپایا مٹھی میں
اک سمندر مکان میں رکھا

ایک محبت جگائی سینے میں
آگ کو خاکدان میں رکھا

جان رکھی تمہاری چو کھٹ پر
دل کو تیری امان میں رکھا

دھوپ پھیلی ہوئی تھی آنکھوں میں
خواب کو سائبان میں رکھا

پاؤں کی بے ثبات وحشت کو
گردش آسمان میں رکھا

خاک ہونے تلک مرے دل نے
مجھ کو وہم و گمان میں رکھا

دل کو تیرے دھیان میں رکھا
شور سونے مکان میں رکھا

اپنا تبصرہ بھیجیں