Chhat Peh Kamra Hai Mera Aur Kamra Bhi Konay

Chhat Peh Kamra Hai Mera Aur Kamra Bhi Konay

Chhat Peh Kamra Hai Mera Aur Kamra Bhi Konay Wala
Kaam aasani se ho jata hai ronay wala

Woh zyada se zyada mera ho sakta hai
Aur iss se bhi mera kuch nahi honay wala

Aain mumkin hai mein seene mein perodon koi shai
Dhoond kar lao koi seene pirone wala

Mein bhi pairon ki tarah nam se namu pata hoon
Hai koi aa kay mere shane bhigonay wala

Kaaghzi nao utha laya hoon umeed ki mein
Woh samandar hai jahazon ko doobonay wala

Chhat peh kamra hai mera aur kamra bhi konay wala
Kaam aasani se ho jata hai ronay wala
غزل
چھت پہ کمرہ ہے میرا اور کمرہ بھی کونے والا
کام آسانی سے ہو جاتا ہے رونے والا

وہ زیادہ سے زیادہ میرا ہو سکتا ہے
اور اِس سے بھی میرا کچھ نہیں ہونے والا

عین ممکن ہے میں سینے میں پرودوں کوئی شے
ڈھونڈ کر لاؤ کوئی سینے پرونے والا

میں بھی پیڑوں کی طرح نم سے نمو پاتا ہوں
ہے کوئی آکے مرے شانے بھگونے والا

کاغذی ناؤ اُٹھا لایا ہوں اُمید کی میں
وہ سمندر ہے جہازوں کو ڈبونے والا

چھت پہ کمرہ ہے میرا اور کمرہ بھی کونے والا
کام آسانی سے ہو جاتا ہے رونے والا

اپنا تبصرہ بھیجیں