Baad Mein Mujh Se Na Kehna Ghar Palatna

Baad Mein Mujh Se Na Kehna Ghar Palatna

Baad Mein Mujh Se Na Kehna Ghar Palatna Theek Hai
Waise sunne mein yahi aaya hai rasta theek hai

Es jahan khak mein har shai ko hai aakhir zawal
Es ka matlab sookh jata hai tu darya theek hai

Zehn tak taslem kar leta hai es ke bartari
Aankh tak tasdeeq kar deti hai banda thek hai

Shakh say patta giray barish rukay badal chatein
Mein hi tu sab kuch ghalat kar hun acha thek hai

Us ke aanso qabar tak pecha na choren gay mira
Mein agar mar jaon us ka dihyan rakhna thek hai

Ek teri aawaz sunnay ke liye zida hain hum
Tu hi jab khamosh ho jaye tu pher kia thek hai

Baad mein mujh se na kehna ghar palatna theek hai
Waise sunne mein yahi aaya hai rasta theek hai
غزل
بعد میں مجھ سے نہ کہنا گھر پلٹنا ٹھیک ہے
ویسے سننے میں یہی آیا ہے رستہ ٹھیک ہے

اس جہان خاک میں ہر شے کو ہے آخر زوال
اس کا مطلب سوکھ جاتا ہے تو دریا ٹھیک ہے

ذہن تک تسلیم کرلیتا ہے اُس کی برتری
آ نکھ تک تصدیق کر دیتی ہے بندہ ٹھیک ہے

شاخ سے پتا گرے بارش رکے بادل چھٹیں
میں ہی تو سب کچھ غلط کرتا ہوں اچھا ٹھیک ہے

اُس کے آ نسو قبر تک پیچھا نہ چھوڑیں گے مرا
میں اگر مر جاؤں اُس کا دھیان رکھنا ٹھیک ہے

اک تری آواز سننے کے لیے زندہ ہیں ہم
تو ہی جب خاموش ہو جائے تو پھر کیا ٹھیک ہے

بعد میں مجھ سے نہ کہنا گھر پلٹنا ٹھیک ہے
ویسے سننے میں یہی آیا ہے رستہ ٹھیک ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں