Ab Yeh Ek Aart Gallery Hai| Poetry In Urdu

Ab Yeh Ek Aart Gallery Hai| Poetry In Urdu

Ab Yeh Ek Aart Gallery Hai Jahan
Teri tasveer lag gayi hai jahan

Iss jaga ja ke kiya karogi tum
Tum se pehle hi roshni hai jahan

Mein wahan sar nahi jukha sakta
Sari duniya jhuki hoi hai jahan

Iss ne bandha hai aise palo se
Aik dhaga bhi hathkari hai jahan

Shahr aabad thay kabhi dil mein
Aaj kal rait urr rahi hai jahan

Ab yeh ek aart gallery hai jahan
Teri tasveer lag gayi hai jahan
غزل
اب یہ اک آرٹ گیلری ہے جہاں
تیری تصویر لگ گئی ہے جہاں

اس جگہ جا کے کیا کرو گی تم
تم سے پہلے ہی روشنی ہے جہاں

میں وہاں سر نہیں جھکا سکتا
ساری دنیا جھکی ہوئی ہے جہاں

اس نے باندھا ہے ایسے پلو سے
ایک دھاگہ بھی ہتھکڑی ہے جہاں

شہر آباد تھے کبھی دل میں
آج کل ریت اُڑ رہی ہے جہاں

اب یہ اک آرٹ گیلری ہے جہاں
تیری تصویر لگ گئی ہے جہاں

اپنا تبصرہ بھیجیں