Woh Kisi Bhi Akas Jamal Mein Nahi | Urdu Ghazal

Woh Kisi Bhi Akas Jamal Mein Nahi | Urdu Ghazal

Woh Kisi Bhi Akas Jamal Mein Nahi Aaye Ga
Woh jawab hai tou sawal mein nahi aaye ga

Nahi aaye ga woh kisi bhi harf-o-bayan mein
Woh kisi nazeer-o-misal mein nahi aaye ga

Usay dhalna hai khayal mein kisi aur dhab
Woh shabahat-o-khado khaal mein nahi aaye ga

Woh jo shehsawar hai baigh zan reh zindagi
Meri saath waqt zawal mein nahi aaye ga

Yahan kon tha jo salamati se guzar gaya
Yahan kon hai jo-wa-baal mein nahi aaye ga

Usay lawonga mein sukoot harf-o-sada mein bhi
Woh sukhan kabhi jo sawal mein nahi aaye ga

Jo hain muntazir bari dair se unhen kya khabar
Nahi aaye ga kisi hal mein nahi aaye ga

Woh kisi bhi akas jamal mein nahi aaye ga
Woh jawab hai tou sawal mein nahi aaye ga
غزل
وہ کسی بھی عکس جمال میں نہیں آئے گا
وہ جواب ہے تو سوال میں نہیں آئے گا

نہیں آئے گا وہ کسی بھی حرف و بیان میں
وہ کسی نظیر و مثال میں نہیں آئے گا

اُسے ڈھالنا ہے خیال میں کسی اور ڈھب
وہ شباہت و خدو خال میں نہیں آئے گا

وہ جو شہسوار ہے ییغ زن رہ زندگی
مرے ساتھ وقت زوال میں نہیں آئے گا

یہاں کون تھا جو سلامتی سے گزر گیا
یہاں کون ہے جو وبال میں نہیں آئے گا

اُسے لاؤں گا میں سکوت حرف و صدا میں بھی
وہ سخن کبھی جو سوال میں نہیں آئے گا

جو ہیں منتظر بڑی دیر سے انہیں کیا خبر
نہیں آئے گا کسی حال میں نہیں آئے گا

وہ کسی بھی عکس جمال میں نہیں آئے گا
وہ جواب ہے تو سوال میں نہیں آئے گا

اپنا تبصرہ بھیجیں