Rahi Raat Un Se Mulaqat Kam| Anwar Shaoor

Rahi Raat Un Se Mulaqat Kam| Anwar Shaoor

Rahi Raat Un Se Mulaqat Kam
Madarat khasi hoi baat kam

Teri yaad itna bara kam
Keh maloom hote hain din raat kam

Kahin dil behlta nahi shahr mein
Nah bazar kam hain nah baghaat kam

Mohabbat mein hoti hain insan ko
Shikasten ziyada fatuhaat kam

Sanbhale hoye hai yeh shoba bhi dil
Ab aankhon se hoti hai barsaat kam

Dimaghon ki parwaz maloom hai
Sawalat wafar jawabat kam

Bohat soon se acha hoon phir bhi shaoor
Dagar goon nahi mere halat kam

Rahi raat un se mulaqat kam
Madarat khasi hoi baat kam
غزل
رہی رات اُن سے ملاقات کم
مدارات خاصی ہوئی بات کم

تری یاد اتنا بڑا کام
کہ معلوم ہوتے ہیں دن رات کم

کہیں دل بہلتا نہیں شہر میں
نہ بازار کم ہیں نہ باغات کم

محبت میں ہوتی ہیں انسان کو
شکستیں زیادہ فتوحات کم

سنبھالے ہوئے ہے یہ شعبہ بھی دل
اب آنکھوں سے ہوتی ہے برسات کم

دماغوں کی پرواز معلوم ہے
سوالات وافر جوابات کم

بہت سوں سے اچھا ہوں پھر بھی شعور
دگر گوں نہیں میرے حالات کم

رہی رات اُن سے ملاقات کم
مدارات خاصی ہوئی بات کم

اپنا تبصرہ بھیجیں