Pyar Ik Shakhs Ke Iqrar Se Mashroot Na Kar

Pyar Ik Shakhs Ke Iqrar Se Mashroot Na Kar

Pyar Ik Shakhs Ke Iqrar Se Mashroot Na Kar
Sharat iqraar peh inkar bhi ho sakta hai

Mujh se daman na chhura mujh ko bacha kar rakh le
Mujh se ik roz tujhe pyaar bhi ho sakta hai

Pyar ik shakhs ke iqrar se mashroot na kar
Sharat iqraar peh inkar bhi ho sakta hai
غزل
پیار اک شخص کے اقرار سے مشروط نا کر
شرط اقرار پہ انکار بھی ہو سکتا ہے

مجھ سے دامن نا چھڑا مجھ کو بچا کر رکھ لے
مجھ سے اک روز تجھے پیار بھی ہو سکتا ہے

پیار اک شخص کے اقرار سے مشروط نا کر
شرط اقرار پہ انکار بھی ہو سکتا ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں