Pa Bah Gul Sab Hai Rehai Ki Kare Tadbeer Kon

Pa Bah Gul Sab Hai Rehai Ki Kare Tadbeer Kon

Pa Bah Gul Sab Hai Rehai Ki Kare Tadbeer Kon
Dast basta shahr mein khule meri zanjeer kon

Mera sar hazir hai lekin mera munsaf dekh le
Kar raha hai meri fard juram ko tehreer kon

Meri chadar to chhani thi sham ki tanhai mein
Be ridai ko meri phir de gaya tashheer kon

Neend jab khwabon se pyari ho to aise ehd mein
Khwab dekhe kon aur khwabon ki de tabeer kon

Rait abhi pichhle makano ki nah wapas aai thi
Phir lab sahil gharonda kar gaya tameer kon

Dushmanon ke saath mere dost bhi aazad hain
Dekhna hai khainchta hai mujh par pehla teer kon
 
Pa bah gul sab hai rehai ki kare tadbeer kon
Dast basta shahr mein khule meri zanjeer kon
غزل
پا بہ گل سب ہیں رہائی کی کرے تدبیر کون
دست بستہ شہر میں کھولے مری زنجیر کون

میرا سر حاضر ہے لیکن میرا منصف دیکھ لے
کر رہا ہے میری فرد جرم کو تحریر کون

میری چادر تو چھنی تھی شام کی تنہائی میں
بے ردائی کو مری پھر دے گیا تشہیر کون

نیند جب خوابوں سے پیاری ہو تو ایسے عہد میں
خواب دیکھے کون اور خوابوں کی دے تعبیر کون

ریت ابھی پچھلے مکانوں کی نہ واپس آئی تھی
پھر لب ساحل گھروندا کر گیا تعمیر کون

دشمنوں کے ساتھ مرے دوست بھی آزاد ہیں
دیکھنا ہے کھینچتا ہے مجھ پر پہلا تیر کون

پا بہ گل سب ہیں رہائی کی کرے تدبیر کون
دست بستہ شہر میں کھولے مری زنجیر کون

اپنا تبصرہ بھیجیں