Main Aur Mera Khuda

میں اور میرا خدا

لاکھوں شکلوں کے میلے میں تنہا رہنا میرا کام
بھیس بدل کر دیکھتے رہنا تیز ہواؤں کا کہرام
 
ایک طرف آواز کا سورج ایک طرف اک گونگی شام
ایک طرف جسموں کی خوشبو ایک طرف اس کا انجام
 
بن گیا قاتل میرے لیے تو اپنی ہی نظروں کا دام
سب سے بڑا ہے نام خدا کا اس کے بعد ہے میرا نام
Main Aur Mera Khuda
Lakhon shaklon ke mele mein tanha rahna mera kaam
bhes badal kar dekhte rahna tez hawaon ka kohram

 

ek taraf aawaz ka suraj ek taraf ek gungi sham
ek taraf jismon ki khushbu ek taraf us ka anjam
 
ban gaya qatil mere liye to apni hi nazron ka dam
sab se bada hai nam khuda ka us ke baad hai mera nam

اپنا تبصرہ بھیجیں