Kis Qadar Lafz Hain

 کس قدر لفظ ہیں
جو ہم بولتے ہیں، رولتے ہیں
کون سا لفظ ہے کھولے گا جو در معنی کا
اس کا پتہ کون کرے!

تم تو خوشبو ہو، ستاروں کی گزر گاہ ہو تم!
تم کہاں آؤ گےاس دشت پراسرار کی پہنائی ٰ میں!
کیسے اترو گے تمناؤں کی گہرائی میں!
رہ گیا میں ۔۔۔۔!

سو اے جان وفا
میں تو جو کچھ ہوں تمہارے ہی خم چشم سے ہوں
تم ہی جب لفظ پس لفظ سے آگاہ نہیں
کس طرح سحر مفاہیم کا دروازہ کھلے
لفظ کی کوکھ میں تاثیر کہاں سے اترے

تم میرے ساتھ ہو ہمراہ نہیں!
کون سے خواب کے جگمگ میں نہاں ہیں ہم تم!
کیسے گرداب تمنا میں رواں ہیں ہم تم!
لفظ کے پار جو دیکھیں تو کوئی راہ نہیں
اور تم لفظ پس لفظ سے آگاہ نہیں
Kis Qadar Lafz Hain
Jo ham bolte hai, rolte hai
Kon sa lafz he، khole ga jo dar maene ka,
Us ka pata kon kare!

Tum to khushbu ho sitaroo ki guzar gah ho tum       

tum kha aao ge is dashte purisraar ki pehnaai me
Kese utro ge tamannao ki gehraai me!
Reh gia me…!

So ai jaane wafaa
Me jo kch kahoo tumhaare hi khame chashm se hoo
Tum hi jab lafz pase lafz se aagah nahi
Kis tarha seher mafaheem ka darwaza khule!
Lafz ki kokh me taaseer kha se utre

Tum mere saath ho hamraah nahi!
Kon se khuwab ke jag mag me nihaa hai ham tum!
Kese gadaab tamanna me rawaa hai ham tum!
Lafz ke paar jo dekhai to koi raah nahi
Aur tum lafz pas lafz se aagah nahi

اپنا تبصرہ بھیجیں